Bhai bahan ki chudai--Bahan ki shadi me mami ko choda

User avatar
rangila
Platinum Member
Posts: 2493
Joined: 17 Aug 2015 16:50
Contact:

Bhai bahan ki chudai--Bahan ki shadi me mami ko choda

Postby rangila » 16 Jul 2016 13:53

بہن صف واپس لئے پھوپھى میں شادی کی


سے: انکاٹ

میری تمام ہیلو! میرا نام ہے (تبدیل شدہ نام)، 22 سال کی عمر شریف کی آیات نقش ہیں ۔ ذکی ہوں، اور ظاہری شکل میں شہوانی، شہوت انگیز بھی، مجھے جو اکثر ان نوجوانوں کو دکھانے کے لیے مایوس ابھی تک 7″ آلات کی ہے ۔ یہ صرف چند دن میرے ساتھ تھا! آج میں تمہارے پاس آنا میری پہلی کہانی کو لے لیا ۔ میں بہت دنوں تک لکھنے کے لئے کوشش کر رہا ہوں مگر آج صرف لکھنا ۔

میں میری چاچی کی سونیپت کے ساتھ رہنے کے لئے جا رہا ہوں بھی سیکٹر 15 اور میری چاچی-دہلی، جو سوناپت کے قریب ہے میں رہنے والے اوروالد میں سوناپت ۔ وہ صرف میرے رشتہ دار چچا-پھوپھى چاچی چچا کے طور پر آپ کے بھائی تھے نہ تھے ۔ ایک سال کے بارے میں جب یہاں میری بہن کی شادی میری چاچی تھی ۔

میں جس دن سے پہلے وہاں چلا گیا ۔ رات خواتین – موسیقی کے پروگرام ہیں ۔ سب رقص تھے اور پھوپھى بھی رقص تھا ۔ کچھ طویل وقت کے لئے، رات کو 2 بج گئے پروگرام جاری رہا ۔ اب سب نے گولڈ، میں نے کیا تھا ۔ سب کام ختم کر دیا ہے ۔ میری آنٹی لڑکے پر کام کررہا تھا ۔ اب ہم سو نہیں، ہم مصروف مل گیا اور میں پھوپھى کے قریب ایک جگہ دریافت کریں تاکہ میں بھی لیٹ تو میں باہر، سو نہیں ۔

چاچی-اوروالد شادی کے 4 سال تھے لیکن ایک بچہ نہیں تھا ۔ مجھے نیند نہیں آ رہی تھی کے بعد محسوس کیا ۔ میں قے کی. اچانک میں نے محسوس کیا میری کم ہاتھ کی تلاش ہے ۔ میں نے محسوس کیا وہ تھا میں ان کے ہاتھ ہاتھ پھوپھى ہٹا دیا ۔

پھر میری نیند پرواز کر رہا ہے ۔ مجھے میرے 7 انچ جھٹکا ہوں کہادا لے آؤٹ ۔ میری کم خیمہ بن گیا ہے ۔ میں نے اس کے ہاتھ دبانے کی تھی ۔ لیکن وہ زیادہ سنجیدگی سے اختیار تھا ۔ پھوپھى ایک بار پھر فارا ہاتھ اور پھر حذف کر دی ہے ۔ صبح 4 بج رہا تھا مجھے اب کو روکنے کے لئے نہیں جا رہا تھا ۔ میں نے وہاں کھڑے ہو اور بیت الخلا میں گیا اور موٹہٹہ کے پھوپھى کو قتل کرنا شروع کر دیا ۔ میں نے اس کے باہر ھیںچو دیر ہو چکی ہے ۔ جب میں باہر آیا تو سب کو دیکھنے کے لئے خواتین چیر گئے اور پھوپھى بھی مجھ پر عیاں تھا ۔

میں خوفزدہ اور پھر لیٹ جائیں اور مجھے نیند آ رہی تھی ۔ مجھے ہوش آیا صبح 8 پر تھے ۔ میری آنکھیں کھلی کی کھلی رہ گئے تھے، ایک ماڈل پر تلاش کر رہے تھے کے پھوپھى مجھے اب دیکھتا ہے ۔ وہ بھی میری طرف دیکھ رہا تھا ۔

تو میں کھڑے ہوئے اور جا رہے ہیں، زیادہ سے زیادہ کام آنے کے بیٹے چاچی کہنے لگے ۔

میں بادشاہ سے محبت کرتا ہوں میری پھوپھی کا کہنا ہے کہ میں تبدیل کر دیا اور کیا جانے والا کام لیا ۔ اسی طرح بج رہا شام 6 جانتے نہیں تھے ۔ اب تمام تیاری کر رہے تھے ان ۔ مَیں بھی تیار تھا ۔ میں شرواناس پہنے ہوئے تھے اور جیسے ایک پھوپھى تھے کوئی فرشتہ آ گئی ہے وہ بھی نظر نہیں ۔

شادی تیوولی باغات، الاپاوری میں تھا ۔ اب تمام ٹرینوں بیٹھنا شروع کر دیا، تو اپنی بہن-بیٹے پر بادشاہ کا انحصار ہے، تجھ سے چاچی خوبصورتی parlour ہے ۔

میں باغ تک پہنچ گیا بہن نے لیا ۔ اب سب بہت خوش تھے ۔ پھوپھى تھا تلاش کر رہے مجھ پر طرح یہ ہے کہ صرف میرے پاس آئی ملفوف ہو گا ۔ اب میرے ذہن میں ہلچل شروع کر دی ۔ میں اور روم سروس سیٹنگوں کے ساتھ ہیں ۔ ایک کمرہ لیا اور اس کے کمرے کے قریب تھا اور میں باہر آیا ۔ جلوس تھا ۔

میں نے کچھ کھایا اور اپنے ماں باپ نے کہا-میں اندر سو رہا ہوں، کچھ کام کرنے کے لئے فون دے ۔
مستقل فتوى چچا-پھوپھى بھی تھے ۔ پھر میں نے کمرے میں لیٹ ہے ۔ کچھ بچے تھے سو رہی ہیں ۔ بعد میں ایک چھوٹا سا کی آواز کمرے کے دروازے کے سوراخ سے باہر آ گئے ۔ مجھے ایک کمرے کی چابی ہے اور ایک میری آنٹی لڑکے فرمائی ۔

میں سوچ رہا تھا کیا ہوا ہے ۔ اسی چچا-پھوپھى کھڑے دروازہ کھول دے ۔ ماما ہاتھ میں ایک بیگ تھا ۔ عام لوگ جاؤں نیچے اور پھوپھی کی پھوپھی، چچا جہونجہالا سے نہ زحمت مجھ سے كها ۔ وداع فون کر دینا ۔ میں آئے گا اپنے کپڑے تبدیل کرنے کی طرف سے ہے ۔

ماما ہو گئے ۔ بچوں کو الگ تھے پھوپھى کی طرف سے میرے ذہن میں دروازہ بند کر! وہ میری پھوپھی تھیں چاچی اترا ۔ وہ پھر اپنے گھوڑے پر ہاتھ رکھ کر اور اسے وہ دبانے شروع کر دیا! میں جان بوجھ کر دوبارہ ہاتھ ہٹا دیا اور وہاں سے کسی دوسرے کمرے میں آ سکتے ہیں ۔

میں جان بوجھ کر دروازہ کھلا رکھا ہے ۔ انہوں نے آ کر دروازہ بند کیا جاتا ہے میری پیٹھ کے پیچھے اپنا بیگ لے ۔ پھر آئے مجھ میں بوسہ کرنے شروع کر دیا ۔ میں پھر جان بوجھ کر اسے غصہ میں ہٹا دیا اور میں بند آنکھوں کے ساتھ لیٹ ہے ۔ پھر وہ سب میرے کپڑے اور کیا مجھے پھر بے لوڈ ۔

میں اسے ہٹانے کے لیے شروع کیا تاکہ میں رہائش پذیر تھا ایک واقعی فرشتہ نظر دیکھتا ہے ۔ میں نے اسے دیکھنے اور مجھے اب کو روکنے کے لیے جا رہا تھا ۔ اس نے پھر اپنے ہونٹ میرے ہونٹوں پر رکھا ۔ اب میں اس کے ساتھ محسوس کیا اور مجھے دے رہا تھا ۔ پسند کے طور پر اگر وہ اس لمحہ کے لئے دیکھ رہا تھا ۔

اگرچہ میں یہ غلط کہا ہے ۔

لیکن اس کی عادت چڑھنے تھا اور وہ بہت کھل کر چُوما کہاٹا گیا تھا ۔ وہ میرا ہاتھ دبا رکھیں اور کہا کہ اپنی دولت پر ڈال دیا-سکوڑیں، آج نہ چھوڑیں ۔ صرف مجھ سے محبت رکھتا ہے اور کچھ نہیں ۔

اور میں اسے اس دولت تمہارے ہاتھوں کو اور اُس رکھا اور دبانے شروع بھی میرا گھوڑا (لاودی) کے ساتھ ساتھ دبا کر چومنا ۔ میں بھی بہت مزے کا تھا اور پھر اس میں دولت چوسنے کی عادت اور اس کے پیٹ چومٹی-رہے کہ اس بلی گیلے نہیں ہو رہی تھی میں نے محسوس کیا چومٹی گے اس کے حلق پر كا بوسہ ليا جائے ۔ پھر میں نے اس بلی پر بوسہ شروع کیا اور اس کے ہاتھ میرے ذہن میں اپنی بلی کو دبانے شروع کر دیا ۔

میری آنکھیں کھلی رہ گئے تھے تا کہ رقص احتیاط سے جب میں نے دیکھا، وہ ایک بہت ہی پیارا ہے، بھی ایک c کی مالکن گلابی تھا بلی کے بال نہیں تھا ۔ پھر میں پھدی کو چومنا اور اسے چوس زارو قطار رو رہی اس پر اصرار کیا محسوس کرنا شروع کر دیا ۔ ہمت اب باہر کھڑے کے لئے اس مل رہا تھا، وہ مجھے نیچے بیٹھ کر اور میری چوس میرا پاجاما اپس لاودی کے ڈیرے شیروانی اور میں آہستہ آہستہ وہ ننگا ہو گیا ۔

وہ کہتے ہیں-وہ کرنے کی اتنی خوبصورت لگے ۔ آج میں اس کے ساتھ کہالونگا!

انہوں نے مجھے اور میرے سنجی جولناما بستر پر چوسنے کی عادت شروع کر دیا ۔ تو میں اس لے لیا ۔ ہم نے 69 میں تھے اور میں بہت زیادہ ہو رہی تھی، نہایت سیکسی بلی چوس زارو قطار رو رہی کو آگے بڑھانے اور وہ تھی اب میرے منہ جہاڈ میں ۔

وہ بھی مجھے jānū کر نے میں بھی آپ کا رس پینے لاودی بیکار ہے کہا جاتا ہے، آپ کے رس کے ساتھ میرے منہ بھریں!

وہ پھر چوسنے کی عادت شروع کر دیا اور میں نے اٹمیزر اور سارہ رس کر دیا ہے جو اس کے منہ میں دی ۔ تھوڑی دیر کے بعد وہ پھر تیار ہو گیا ۔ اور وہ دوبارہ میری لاودی اسٹینڈ بنایا ۔ آپ کو شام کے محاذ پر پڑھ رہے ہیں کہانی ڈاٹ کوم ہو!

اس وقت مجھے یہ tight اُس کے مُنہ کے آغاز سے لیٹ ہے ۔ میں تک آیا اسے اس کے منہ میں اپنا منہ چودنی لاودی اور چھوڑیں آپ کی رائے سے بڑی تھا ڈال لیا مذاق ہے ۔ اب یہ دیر ہو چکی ہے، میں چومٹی نہیں اس کی بلی اور رہے کہ اس بلی گیلے نہیں ہو رہی تھی فیلٹ چوسنے کی عادت کے درمیان اپنے پاؤں ۔

انہوں نے بتایا ہے کہ مجھ سے اب ایسا نہیں، jānū، آپ لوڈہ ڈمپ کریں اور میں بنا!

میں نے اس کی ٹانگیں پھیلا ہوا اور اس نے محسوس کیا اس کے انعقاد بلی ہے لاودی کے منہ پر "ھ... ہیں نا.... ' وہ تھا، اور میں اس تدپانی کو محسوس کیا ۔ دونوں فانکون کے درمیان رگدانی اور زور زارو قطار رو رہی اس کے گیلے بلی پتکانی پر ڈال دیا ۔

پرے وہ اس ہاٹ سپاٹ ہاٹ سپاٹ ااہاہہہ ھ تھکی ہو رہی.... آہ ہا یو ہاہاا ۔ بادشاہ، اب ڈمپ ورنہ میں مر جائے گا!

میں نے جدائی کی پیاس کو سمجھا اور ایک مشکل دھکا مردوزن کے سپر بلی کے سوراخ پر رکھا ۔

وہ ہوش میں چیخ و پکار کو-آہ... ااہہہہ مزید پڑھیں

اور اس بلی کے لئے کہودن شروع کر دیا ۔ تو میں رک گیا اور پھر اپ دیر بوسہ لينا شروع کر دیا جب انہوں نے چللایا.

انہوں نے کہا کہ jānū تھا مجھے نقصان پہنچا رہی ہے ۔

میں کم درد ہو انتظار کر رہے تھے، اس کا بوسہ لے لے کر رات کیڑوں اور دولت تھی ۔

پھر میں نے میری نصف مرگا اس بلی اور اس کے منہ سے اپنے ساسکآریاون کے قریب اپنے ہونٹ ھ گن گونگونگون امم مگر دبانے تھا کہ... اعادہ کرنے کے لیے ایک دھکا رکھوں ۔ آوازیں آ رہی تھیں ۔

وہ لگا کنگ کا کہنا ہے کہ، مجھے اپنے بچے کی ماما بنانے کے لئے!

میں اپنے لوڈہ پھدی میں ٹکرا اور اسکے کہومٹی لیٹ بلے سب سے اوپر پر ہے ۔

وہ مجھ سے بادشاہ کو بتایا کہ آپ مجھے پسند ہے اور میں ابتدائی ماں بنا!

تو میں دونوں اس پر اٹھ کر اس چودنی دولت ہاتھ محسوس کیا اور "آوازیں. اچ حب ۔ اپنے منہ اہ اہ آہ آہ آہ کلیجا ہٹا دیا اس کا درد تھا، وہ بھی مجھے دے اور اپنی گانڈ اٹھا-اٹھا تھا آپ کی رائے کو چھوڑ کر رہے تھے ۔

میں جان لے وہ ملامت کے لئے جا رہا تھا، میرے پاس کچھ ہو رہا ہے!

اور وہ اس کا رس اکدانی ڈھیر ہو گئی اور میرا بس نہیں، بلکہ یہ نکلے، میں جا رہا تھا اور میں امم ملامت اس ھ گن گونگونگون... " آوازوں کو سننا تھا لیکن میں ان کے کام میں خوش تھا ۔

اور میں بھی اپنے شوق سے آئی اور اسے گھوڑی سنجی جولناما هونے سے پوچھا کہ آپ بلی باہر لے ۔ انہوں نے اسے پیچھے سے منعقد کیا اور دہاککام-بات کو اگرچہ سنجی جولناما کو اپنے پیچھے ڈال دیا اس بلی بن گیا ۔ اس کے ہاتھوں اس چوچوک مانجانی محسوس کیا ۔

وہ مزہ رہا تھا اور میں نے سامان حاصل کرنے کے لئے جا رہا تھا ۔ اس عرصہ میں دو بار جہاڈ تھی ۔ سب سامان اپنے معصوم ج بلی فائرنگ کی اور ہم دونوں فرض کی طرح لفاف کرنے کے قابل تھے میں مالک ہوں ۔ اس کے بعد ہمیں، اتارنا fucking دونوں نہا رہا ہے ۔ پھر ہم تیار تھے اور چچا کی کال بھی تھے ۔ ہم آتے ہیں ۔

دوستوں، روایت شروع سے یہاں، جب بھی ہمیں موقع ملے، ہم بھی دونوں فون کے ساتھ جنسی جنس ہے ۔ آج وہ ایک بچے کی ماں ہے ۔

آپ میری کہانی کیسے مل گئی ہوں باتیگ میں آپ لوگ لا ان کی کہانیاں بعد میں اس بات کا یقین ہے ۔

شکريا! میں اپنے میل کا انتظار کروں گا ۔

Return to “Urdu Font stories”

Who is online

Users browsing this forum: No registered users and 2 guests