urdu font sexy stories


User avatar
rangila
Super member
Posts: 5586
Joined: 17 Aug 2015 16:50

Re: urdu font sexy stories 10

Post by rangila »

شادی کی کنواری چوت نوٹ: ان کہانیوں کو آپ کے سامنے لانے کا مقصد صرف آپ کو فرع فراہم کرنا ہے کہ آپ کو
غلط راستے پر چلنے کے لیے اکسانا ان کہانیوں سے مزہ اورتجز ضرور حاصل کریں گریکس کے لیے ناجائز طریقہ کار اپنانا شرما اور قانونا جرم ہے اپنے آپ کو جائز تعلقات تکمد و در ہیں۔ شکریہ میں بیویب سائٹ کافی وقت سے وزٹ کر باہوں میں نے تقریبا ساری ہی کہانیاں پڑھی ہیں لیکن ان میں آپ کو اپنی زندان کا ایهات منانے جارہا ہوں۔
ہمارے محلے میں ایک آنتی رہتی ہیں جو کہ سلائی سکھاتی ہیں ان کی دو لڑکیاں ہیں بڑی لڑکی کا نام اور چھوٹی کا نام میر ا ہمند اکثر ہمارے گھر آتی ہے میں مندی کا کسی نگر دیکھ کر اسے چودنے کے بارے میں سوچتا تھا۔
مدا کا رنگ گندی اور سائز 34-32-34 ہے ایک دن جب میرے گھر والے کی شادی میں گئے ہوئے تھے مد ہمارے گھر آئی گھر میں میں اکیلا ہی تھا اور ٹی وی پرفلم دکھ رہا تھانا آتے ہی میری میری می کے بارے میں پوچھنے گی میں نے بادہ آتی ہی ہوگی تم تھوڑی دیر انتظار کردند اصوفے پر بیٹھ گئی اوفلمو بجھے گی فلم میں ایک سیکسی سین آیا میں نے جان بوجھ کر چینل تبدیل نہیں کیا اور یہ فلم دیکھتے ر ہے تھوڑی دیر میں بدا کی حالت دی۔ ہونے گی اور وہ ایک ہاتھ سے اپنے ممے دبانے لگی میں نے اس کی طرف دیکھا اس کی نہیں ٹی وی بھی ہوئی تھیں میں اٹھ کر اس کے پیچھے کھڑا ہو گیا میرا لنڈ میری پینٹ میں اگر کر روڈ کی طرح ہور اتھاپھر میں نے اس کی گردن پر کسنگ کی اس کی ملکی سی سسکی نکلی میں اس کی گردن کے ساتھ کسنگ کرتا ہوا اس کے گالوں اور اس کے کان تک کس کرنے لگا اس کی آنکھیں گلابی ہونے لگیں تقریبا 10 منٹ تک میں اس کی گردن ، گالوں اور کان کے قریب کسنگ کرتا رہا۔ پھر میں نے اس کے ہونٹوں پر کسنگ کی تو اس نے بھی ریسپانس دیا ہم 10 منٹ تک کسنگ کرتے رہے پھر میں نے اپنا ایک ہاتھ اس کے موں پر رکھا اور دیر سے دبایا کچھ دیر میں اس کے موں کو دباتا رہا پھر میں نے اپنا ہاتھ اس کی نمی میں ڈالا اور اس کے ممے دبانے لگا اور ایک ہاتھ اس کی شلوار میں ڈال کر اس کی چوت کو سہلانا شروع کر دیا اس کی آنکھیں بندھیں اور وہ مزے میں گم ہوکرمستی بھری آوازیں نکال رہی تھی۔
میں نے ایک دم سے اس کی میں اتار دی اور اس کا یہ مزہ بھی کھول دیا اور اس کے ممے چوسنا شروع کردینے اس کی مستی میں بھری آوازیں نکل رہی تھیں وہ کہ رہی تھی میرے مموں کو کھا جاو تمہارے ہیں صرف مبارے میں اس کے مموں کو ایک کے بعد دوسرے کو چوستا رہا اور ایک ہاتھ سے اس کی چوت کو مسلتا رہا کچھ دیر کے بعد میں نے اس کی شلواربھی اتار دی اور اس کی مانگوں میں بیٹھ گیا اور اس کی چوت کو چاٹنا شروع کر دیا اس نے میرا سر اپنی چوت پر کس کر دیا رکھا تھا اور کہہ رہی تھی جانوں کھا جاؤ میری چوت کو اور امرا رہا ہے تم نے مجھے جنت کی سیر کر دی میں نے کبا جان ہول میز اتو ابھی باقی ہے پھر میں نے اپنی پینٹ اتاری اور پالنے اس کے منہ میں دیر یا اور کہا اسے چوسووعمر 8اکانڈ چوسنے گی انا کتنا مزا آ رہا تھا میں بیان نہیں کر سکتا۔
پھر میں نے اپنالنڈ اسکی چوت کے منہ پر رکھ کر رگڑنا شروع کر دیا وہ کہے گی جانوں کب اور مت تزاو مجھے چودو میں نے ایک زور دار دھکا لگایا اور میرے لنڈ کا تو اس کی چوت کے اندر گھس گیا اس کی چیخ نکل گئی اور وہ پا نے بھی باہر نکالو مجھے ہیں پر ونا 1
5 201955 میں مرگئی بہت درد ہورہا ہے پلیز ابنالنڈ باہر نکال لو مگر میں نے اس کی پروا نہیں کی اور زور زور سے جھیلے لگانے لگا جس سے میر بانڈ اس کی چوت میں مزید دوا تک اند رچایا گیا اس کی چوت بہت چھوٹی موراٹھی اور میر بانڈ بہت باورمونا تھا اس کی ایک اور زبردستی نکلی اوهآ وآجر گئی میری چوت پچھاڑ دی تم نے باہر نکالو اپاند پلیز میں نے کہا جانوں برس پہلے پہل تھوڑ اور ہوگا کچھ دیر میں مزہی مزا ہو گا ۔ میں کچھ دیر رکا اور پھر ایک زور دار جھکا مارا اور میر انٹ 4 انچ تک اس کی چوت میں چلا گیا اس کی تیل چت چکی تھی اور اس کی چوت سے خون نکنے لگا میں کچھ دیر کے لئے رکا اور پھر دھیرے دھیرے اس کی چوت میں اپنے لنڈ کو اندر باہر کرنے لگا کچھ دیر کے بعد جب وہا رل ہوئی تو میں نے ایک اور جھنگ مارا اور میر اپر لنڈ اس۔
کی چوت کے اندر کسی کے نائب ہو گیا میں اس کے ممے چوسنے لگا ور دھیرے دھیرے اسے چودنے لگا کچھ دیر بعد جب وہ نارمل ہوئی تو کہنے گی جانوں تیز تیز چودہ میں نے دھیرے دھیرے اپنی رفتار بڑھانا شروع کر دی اور اس کو بردی بیدردی سے چودنا شروع کردیاوہ کہ رہی تھی جانوں اپنانڈ میری کنواری چوت میں ڈالے رہو اور مجھے چودتے رہو میں رنگ کی ہوں اور آج سے تمہاری خیل عبوں تقریبا 10 منٹ بعد میں نے سٹائل تبدیل کیا اور اسے ڈو سٹائل میں کیا اور پھر اسے چودنے کی تقریبا 20 منٹ کی حیرانی میں وہ بار چھوٹے چکی تھی پھر کچھ دیر بعد میں نے اسے کہا کہ جان میں چھوٹنے والا ہوں اور میں نے اپنائنڈ اس کی چوت سے نکال کر اس کے منہ میں دیدیا اور وہ میرا لنڈ چوسنے گی اور میں اس کے منہ میں ہی چھوٹ گیا۔ ۔
پھر میں نے اس کی کا بھی ماری گری در استان میں آپ کو اپنی دوسری کہانی میں سناؤں گا۔ میری کبانی کیسے گی یہ مجھے آپ ای میل یا کال کر کے ضرور بتائیں۔

User avatar
rangila
Super member
Posts: 5586
Joined: 17 Aug 2015 16:50

Re: urdu font sexy stories 11

Post by rangila »

چاچی کی مست چدائی نوٹ: ان کہانیوں کو آپ کے سامنے لانے کا مقصد صرف آپ کوتفریح فراہم کرنا ہے تا کہ آپ کو غلط راستے پر چلنے کے لیے اکسانا ان کہانیوں سے مزہ اورتجر ضرور حاصل کریں انگریس کے لیے ناجائز طریقہ کار اپنانا شرما اور قانونا جرم ہے اپنے آپ کو جائز تعلقات تک مجدد دریں۔ شکریہ
ہیلو دوستو میر نام کلیل ہے حیدرآباد میں رہتا ہوں اور میری عمر 24سال ہے۔ میری دوسری کہانی ہے
یہ ان دنوں کی بات ہے جب میں انٹر میں تھاب گھر والے کراچی گئے ہوئے تھے میں کالج سے گھر واپس آیا تو گھر پر چاچی کے سوا کوئی نہیں تھا میں آتے ہی نہانے چلا گیا میں نے چاچا سے کہا چی پلیز تولی تو دیا بچی نے مجھے تو یہ دیا مجھے نہیں تھا کہ چھی مجھے دروازے میں ایک سوراخ سے د کھیری ہے۔ جب میں نہا کر واپس آیا تو چچی کی نظر میر لنڈ کی طرف تھی میں نے کوئی نوٹس نہیں کیا۔
کھانا کھانے کے وقت بھی چاچھی مجھے مجیب کی نظروں سے دیکھتی رہی میں کھانا کھا کے سونے چلا گیا شام کو میری آ کے ملی تو میں نے دیکھاچاچی میرے لنڈ سے کھیل رہی ہے میں ایک دم گھبرا کے اٹھ گیا میں نے پاپا سے کہا یہ آپ کیا کر رہی ہو تو چاچی نے کہا تم نے اتنا پیارا گڈو چھپائے رکھا ہوا ہے میں نے کہا تو پھر کہاں رکھوں پایگھا نے کہا اس کی بد تو چوت ہے میں نے کہامیر ے پا کر تو چوت والی نہیں ہے چاچی نے کہا میرے ہوتے ہوئے ہیں اس کی فکر کرنے کی ضرورت نہیں ہے چوت میرے پاس ہے اوران تمہارے پاس تم اپنالند میری چوت کے اندر ڈال سکتے ہو۔ پچھر چاچی نے میری پینٹ اتاردی اور میرے لنڈ کو منہ میں لے کر چوسنا شروع کر دیا میں تو جیسے ساتویں آسان کی سیر کرنے لگا پندرہ منٹ تک میرے لنڈ کو چوسنے کے بعد چاچی نے کہا کہ خود ہی مزے لیتے رہو گے یا مجھے بھی مزا دو گے میں نے کہا جیسے آپ کی مرضی پچر پچی نے نائم ضائع کئے بغیر اپنی میض اتار دی۔ ! کیا تھے چاچی کی گورے گورے 38 کے مجھے دیکھ کر میں تو پاگل ہو گیا فوری چاچی کے مموں سے لپٹ گیا اور ایک کے بعد ایک کو چوسنے لگا پھر میں نے چچی کی شلوار بھی اتاردی چاچی کی چوت بھی گلابی ہورہی تھی جس پر بال بھی نہیں تھے میں ایک ہاتھ سے چھی کی چوت سہلانے لگا اور بڑے بڑے مموں کے مزے لینے لگا پھر میں نے چاچی کی چوت پاناشروع کی تو اپنی مستی بھری آواز میں کہنے کی میری جان کھا جا میری چوت
کو یہ اب تیری ہے 20 منٹ تک میں چاچی کی چوت انار اس دوران پانی چھوٹ گئی پچر پچی نے کہا جان اب مجھ سے برداشت نہیں ہو رہا ہے میری چوت میں تو نے آگ لگا دی ہے اب اس آگ کو اپنانا کے پانی
سے بجھا دو پھر میں چاچی کی دونوں جنگوں کے درمیاں بیٹھ گیا اور اپنانڈ چاچی کی چوت کے سوراخ پر رکھ کر ایک زور کا جھکا گیا تو میر انڈ دو انچ تک چاچی کی چوت کے اندر چلا گیا دوسرے مجھکے سے میر ان تقریبا آدھا پاپی کی چوت کے اندر گھس گیا چاچی کی چوت بہت ٹائٹ تھی۔ چاچا مستی میں تھی کہے گی زور زور سے دھکے مارو پاسارا انا میری چوت میں ڈال دوبیری چوت کو چار دو میری چوت بڑے دنوں سے پائی ہے۔ پھر میں نے اپنا پورازور لگا کے دھکا مارا اور جب تک سارا لنڈ چاچی کی چوت میں ڈال دیا۔ چاچی کی چیخ نکل گئی پر چاچی نے کہار نتانہیں
ب زور زور سے دھکے لگانا شروع کرو پھر میں زور زور سے لنڈ کو چوت کے اندر باہر دھکے لگانے کا تقریبا 10 منٹ کے بعد میں نے چاچی کو ڈوگی سٹائل میں کیا ور چچی کی چدائی شروع کردی چی تو مزے میں مست تھی 20 منٹ کے بعد میں چھوٹنے لگا تو میں نے چاچا سے کہا میں چھوٹنے والا ہوں چاچی نے کہا کوئی بات نہیں چوت میں ہی سارا پانی ڈال دو میں نے چاچی کی چوت کو اپنے لنڈ کے پانی سے بھر دیا ۔ اس کے بعد میں نے پاچه کی گند ماری یہ کہانی میں آپ کو دوسری قسط میں سنائیں گا آپ کو میری کہانی کی گئی مجھے ای میں کر کے ضرور بتانا - میر ای میل می رئیس ہے۔

User avatar
rangila
Super member
Posts: 5586
Joined: 17 Aug 2015 16:50

Re: urdu font sexy stories 12

Post by rangila »

سونیٹ کزن ما نوٹ: ان کہانیوں کو آپ کے سامنے لانے کا مقصد صرف آپ کوتغرس فراہم کرتا ہے کہ آپ کے
غلط راستے پر چلنے کے لیے اکسانا ان کہانیوں سے مزہ اورتجز ضرور حاصل کریں مگرسیکس کے لیے اجائز طریقہ کار اپنانا شرما اور قانونا جرم ہے اپنے آپ کو جائز تعلقات تک ممد و در ھیں۔ شکری میرا نا معنی ہے اور عمر 28 سال ہے لاہور کا رہنے والا ہوں ۔ اور یہ ایک سچا واقعہ ہے اور اس میں ایک لفظ بھی جھوٹ نہیں ہے اور میرا لکھنے کا پہلا Experience ہے۔ امید ہے آپ کو پسند آئے گا۔ یہ ایک سال پہلے کی بات ہے مجھے sex کا بھی نیانا شوق ہوا تھا۔ زیادہ مٹھ مار کر ہی گزارہ کرتا تھا۔ اور مٹھ مارتے ہوئے بھی امی ، مہین مثال، نوربھی میری سویٹ کزن (بها) کو سوچا کرتا تھا ان تینوں کی سوچ کر اور BP رکھ کر اور sexy stories NET پڑھ پڑھ کر میر اب میرا حال ہو چکا تھا۔ اپنے کسی دوست کے ساتھی sex کرلوں پر سب کے ساتھ کوئی زکون اش کی تھی جن سے وہ اپنی sex کرنے کی خواہش پوری کر لیا کرتے تھے میرے ساتھ بھلا کون sex کرتا۔ میں نے سوچا اب ایک ہی راستہ بچا ہے اور وہ ہے گھر یہ کام گھر سے ہی شروع کر پڑے گا گھر میں تین لوگ تھے جن سے sex ہوتا تھا ان میں امی تھی بین ، لوکزن های بی تینوں ہی نالی کی sexy تھی امی سے تو کچھ نہیں ہوسکتا تھا کیوں کے امی ابھی کافی Smart اور پیاری تھی اور ابو امی کی پھدی اور گانڈ کی پیاس بجھاتے رہتے تھے اور امی ابو کبھی خوب پیارکرتی تو
چھلا میرے لن سے امی کا کیا بنا تھا پر میں بہت مال تھیں بہت دفعہ ای نے میری نیت خراب کروائی ان کے دودھ بہت سال پر میں کیا کرتا سوائے واش روم جا کر ہاتھ سے منی نکالنے کے ۔ اور میری سویٹ کزن بہا اس کا اپنا ایک بوائے فرینڈ جس کانام Ali ہے علی سے وہ پیار کرتی تھی اور وہ دونوں بہت دفعہ Sex بھی کر چکے تھے ہر وقت فون پر بات بھی ہوتی رہتی تھی جو بھی تھاچن سال تھی مجھے بہت اچھی لگتی ہے اس کا فگر بہت مال ہے وہ میری بہن کے ساتھ اس کے کمرے میں رہتی ہے اوروس اب کافی تیز ہو گئی تھی اور مجھے کچھ دنوں سے لگ رہا تھا کے مشال اور بہا آپس میں کافی زیادہ قریب ہوگئی ہیں اور کافی Time اکشها گزارنے لگی ہیں اور نوٹ کرنا شروع کیا کہ اب وہ ہاتھ کا مزاق بھی کرنا شروع ہوگئی ہیں ایک دن تو میں حیران رہ گیا کہ ہما نے مشال کی مذاق مذاق میں Breast پڑھی اور وہ بھی بھاو کی میرا اور براحال ہو گیا اور چین بھی کھڑا ہو گیا اب میں نے سوچا ہوا ہو یا آپس میں sex ضرور کرتی ہوں گی کسی رات کو ان کو پکڑوں گا اور بس پھر زندگی میں مزا ہی مزے شروع ہو جائے گا میں اب رات کو ان کو چیک کرنا شروع کیا ایک دن شام کے وقت امی اور ابو نے
کی شادی پر جانا تھا اور رات کہ لیٹ آتا تھا میں نے سوچا آج اگر ان کو پڑوں تو کام اچھے طریقے سے ہو جائے گا اور موت تو بہت اچھا تھا بس اب میں نے کمرے
کی کھڑکی سے کان لگا لیے کوئی بھی sexy آواز کے آنے سے میں ان پر کچھ پریشر ڈال کر کھا بھی کر لوں گا میں بار بار کھڑکی پر آکر چیک کرتا رہا پرکوئی چکرنہیں رات 12 : 00 کے بعد میں نے ایک آخری بار چیک کیا تو کیا دیتا ہو کمرے میں سے ہما کی آوازیں آرہی تھی .................. آه آه آه..................... ہم آہ آہ آہ
................. میرا تو لن کھڑا ہو گیا میں مٹھ مارنے لگا کہ ایک دم دروازہ کھلا اور مثال باہر آئی اور وہ مجھے دیکھ کر پریشان ہوئی اور میں بڑا پریشان ہو گیا۔ اس نے میرا لن دیکھا اور میں نے جلدی سے اسے چھپالی میرے پاس آئی اور کچھ ڈر کر پانی بھائی پلیز میرا کوئی قصور نہیں صرف دوسری دفعہ آیا ہے میں نے کو بہت سمجھایا پرو نہیں مانی اور اس نے روم میں Ali کو بلایا یا بھائی پلیز میری بات کا یقین کرو۔ پلیز .................... مثال اپنی بات ختم کرنے پر رونے کی ..... میں یہ سن کر قاتقا رہ گیا اور میں سب
کچھ جھول کر مشال کوخوب ڈانٹا اور میری آواز روم میں علی اور بات بھی گئی اور علی اسی وقت کپڑے پہن کر جانے لگا میں نے اسے روکا اور اس سے پوچھا تم ہما کے بارے میں سنجیدہ ہو یا کہیں ................. وہ بولا کہ میں اپنے والدین سے بات کر چکا ہوں اور وہ نہیں مانے پر مجھے یقین ہے۔ میں انہیں منا لوں گا۔ میں نے کہا کہ وہ نہ مانے تو چھر؟ ہما کا کیا ہو گا وہ تم سے بہت پیار کرتی ہے اور اب تم پیچھے ہیں ہو سکتے ہیا کی زندگی کا سوال ہے میں ایک بات کا کسی سے ذکر نہیں کروں گا اور جب
تک تمہارے والدین نہیں مانتے اس وقت تک تم اسے نہیں لوگے علی نے ہاں میں سر ہلا دیا میں نے اسے جانے کو کہاوہ چلا گیا۔ میں نے مشال کو اشارے سے باہر جانے کو کہا۔ وہ چلی گئی. اب میں اور با تھے میں نے اس سے علی کے بارے میں کافی باتیں کیں موقع اچھا تھا میں نے فائدہ اٹھایا اور ہاکی سمجھاتے سمجھاتے اپنے قریب کیا اور سینے سے لگالیا اور اس کے کان میں کہا کہ تم بہت پیاری ہواور آج تمہاری خوبصورتی بہت بہت قریب سے دیکھی تمہارا جسم تو مال ہے اور دودھ کا کیا کہنا اور پورا جسم تو میں دیکھ کر پاگل ہو گیا ہوں یہ کہہ کر میں نے اسے اور قریب کر دیا وہ پکڑے جانے پر کچھ پریشان تھی میرے ساتھ چل رہی پر کچھ ابوئی اس کے خوبصورت Boobs میرے ساتھ لگے۔ ہوئے تھے وہ اٹھ کر جانے لگی تو میں نے ہاتھ سے پکڑ کر اپنی طرف کھینچا اور اس کی کال پر kiss کر دی اور کان میں بولا LOVE YOU | تم بہت پیاری ہو اور پیچھے سے Hug کیا اور وہ اپنے آپ کو پیشروا کر بھاگ گئی میں کافی دیر کھڑا رہا پھر اپنے کمرے میں چلا گیا۔ میں نے مشال کو اپنے کمرے میں بلایا اور پاک بٹھایا اور پوچھا کے جب علی اور بها sex کررہے تھے تو تم ان کے کمرے
میں کیا کر رہی تھی وہ مجھے ڈر گئی اور کوئی کچھ نہیں کر رہی تھی جب علی روم میں آیاتو میں واش روم میں چلی گئی تھی اور ان دونوں کو دیکھے بنا میں کمرے سے نکل آئی۔ میں نے کہائم پر یشان مت ہو اور میں تمہارا بھائی ہی نہیں تمہارا دوست بھی ہوں اور اسے اپنے پاس کرلیا اور اس سے پوچھا
کہ تمہارا کوئی دوست ہے وہ بولی ہیں میں نے کہا کوئی دل میں ہے۔ تو وہ بولی مجھے علی اچھا لگتا تھا ........................... میں نے کہا تھا کا کیا مطلب ہے کیا اب اچھا نہیں لتا............................................ تو ہوئی ہیں وہ مجھ سے زیادہ تم کو چاہتا ہے اوروہ کئی دفعہ روم میں آ کر بہا کے ساتھ سویا ہے وہ اب مجھے اچھانہیں لات
...................................... میں نے کہا جب وہ رات کو آتا تھا تو تم کہاں ہوئی تھی ....................................... ؟ میں بھی وہاں ہی ہوتی تھی اور سب سنی اور دیکھتی بھی تھی چپ چپ کر ................. میں نے کہا پھر تو تمہیں بہت مزا آتا ہوگا ........................................................ ؟وہ کوئی نہیں مرا سے زیا دہ جلن ہوتی تھی ................................... میں
نے کہا جن کیوں ..................... ؟ وہ بونی بس مجھے نہیں معلوم .............................. میں نے اسے گلے لگایا اور وہ کچھ دیر بعد اپنے کمرے میں چلی گئی۔۔۔ دن گزرتے رہے اور میں اسے آہستہ آہستہ فری ہوتا گیا اور کبھی کبھی ہاتھ سے مزاق بھی شروع کر دیا اور خوب تعریفیں کرتا رہتا۔ ایک دن میں اس کے پاس سے گزرا اور ڈرتے ڈرتے اس کے پیچھے ہاتھ پھیر دیا جاسکرا کر کچن میں چلی گئی میں بھی پیچھے چلا گیا پر ساتھ ہی ہامی بھی آگئی میں واپس چلا کافی دنوں بعد امی اور مشالانی کے گھر کسی کام سے گئے اور گھر میں اور میں اور ہاتھ میں اسے پوری ہونا شروع کیا اور اسے اشارہ کیا کہ میرے کمرے میں آئے اور میں کمرے میں چلا گیا کچھ دیر بعد وہ بھی آ گئی۔ میں نے پوچھا اور کہا میں وہ لونی ابو اپنے دوست کے ساتھ کام سے باہر نکلے ہیں۔ ...................................باہر کا دروازہ چیک کیا اور اپنا کمرے کا دروازبھی لاک کیا ....................... اب میں تھا اوروہ ...................... میں اس کے پاس گیا اور اس کے بالوں کی تعریف کی تو اس نے اپنے الطول دے
۔ اس کی تعریف کی تو کچھ شر مائی میں نے اس کی بالوں میں ہاتھ پھیرا اور ساتھی اس کے چہرے پر اس نے اپنی آنکھیں بند کر لی اور میں اس کے ہونٹ چوسنے لگا وہ بھی مست ہونے کی اور میرا ساتھ دینے کی کافی دیر س کرنے کی بعد میں نے اسے بستر پر ٹالیا او رمیض اوپر کر نے لگاتو میرے ہاتھ کو پٹریا میں اب کہا رکنے والا تھا۔ کئی سالوں بعد شکار ہاتھ آیا تھا۔ میں نے میں اوپر کر دی اور اس کے پیٹ پر کس کرنے لگا اور آہستہ آہستہ او ر کو جانے لگا اور Bra کے اوپر سے اس
کے دودھ چوستا رہا اور ساتھ ساتھ اس کی ساری میں اتار دی میں نے اسے شلواراتارنے کا پو چھنائونه میں سر ہلاتی رہی میں نے زبردستی اس کی شلوار اتار دی اس نے کچھ نہیں پہنا تھا اب وہ صرف Bra میں تھی کیا چیز ہو تم بہت پیاری ہوتی جیسا کوئی نہیں اب Bra بھی، تا ردو اور مجھے اپنی زندگی کا سب سے اچھا نظارہ کرنے دو اس نے ایک جھٹکے میں اپنی Bra اتار کر دور پھینک دی اور میں
سے 2 من تو دیتا ہی رہا اس کا گر تو مجھے پاگل کر رہا تھا...........................وہ ایک دم بھاگ کر میرے گلے
ل گی اور بولی اب دیکھتے ہی رہو گے یا کچھ کرو نے بھی میں نے اسے پکڑ کر سینے سے لگایا اور Kiss کرنے لگا اور زور سے اسے اپنے ساتھ لگائے رکھا اور پیچھے سے اس کے کیٹ میں انگلی پھیرتا رہا اور وہ میری زپ کھول کر میری مٹھ مارتی رہی میں اسے چھے کرتے کرتے بستر پر نالیا اور اپنے سارے کپڑے اتار کر اس کے اوپر بیٹھ گیا اور جگہ جگہ سے پیار کرنے لگا اس نے کہا جلدی کرو جوگرا ہے اب گھر والے آنے والے ہوں گے میں نے اس کی پھدی چاٹنا شروع کی تو کچھ دیر بعد ہا مجھے گالیاں دینے گی۔ اسی طرح کر حرامی ۔ وہ مجھے بہن بہن کہتا تھاسالے آج بہن کی چاٹ رہا ہے ...................................... کافی دیر لیانگ کر نے کے بعد میں نے اسے لن کی طرف اشارہ کیا وہ مجھ گئی کے اب میری باری ہے اور اس نے اپنی باری خوب نبھائی کیامز اویاما نے اور اس نے مجھے کہا کہ اس طرح کی sucking کا مزا تمہاری بیوی بھی نہیں دے سکتی اور واقعی اس نے بہت مزا دیا آہ آہ آ ہی مزا آ گیا میری نکلے جانی تھی اسی کے منہ میں میں نے اس کے کہا کے نکلنے والی ہے پر مست ہو کر گئی رہی اور اس کے منہ میں ہی میں فارغ ہو گیا اور اس نے میری ساری منی اندر نگلنی
مجھے بہت اچھا لگا... اب میرا بیٹھ چکا تھا اس نے مجھے کہا کیم سے کھڑا کرو میں پیشاب کر کے آئی وہ واش روم چلی گئی میں مٹھ مارنے لگا کے یہ کھڑا ہو جائے ابھی اصل کام باقی ہے کافی ٹائم گزرگیاوہ
انہیں نہیں ہی میں واش روم گیا تھا وہ بھی ابھی تک پیشاب نہیں آیا ایک دم اس کا پیشاب نکلنے لگا اور پیشاب کرنے کے کچھ دیر بعد بولی میری پھدی چاٹو میں نے اسے اٹھایا اور بستر پاتایا اور اس کی پھدی چاٹنے لگا اور وہ مزے سے گرا ہے گی اور اس کے پیشاب کاذا تقم میرے اندر جانے لگا اور پاتے ہوئے وہ چھوٹے والی ہوگئی اور ایک دن اس نے میرے سر کے بال کھینچ اور اس کے جسم میں بجلی سی تیزی آگئی اور ساتھ ہی اس کی منی نکل آئی اور میں ساری چاٹ گیا۔ اب وہ آرام سے لیٹ گئی اور مجھ سے پوچھا کے مزا آ رہا ہے۔ میں نے ہاں میں سر ہلا دی ہوئی جلدی اپنے شیر کو کھڑا کرو ابھی اصل کام کرتا ہے۔ وہ میرے نوپا گئی اور 69 کی پوزیشن میں ایک دوسرے کو خوب پیار کیا۔ اس کی سیکسی آوازیں سن کر میرا لن کھڑا ہو چکا تھا اور وہ میرے لن کی نیت کو دیکھتے ہوئے یونی اب میری
پھدی مارواب جلدی کرو مجھ سے راہیں جارہائیر اس کی سیکسی آوازیں سن کر میں بھی پاگل ہورہا تھا میں نے اس کی پھدی پہن رکھا اور ایک ہی جھکے میں اس کی اندر کر دیا اس نے زور سے چیخ ماری حرام ارادے مارے گا مجھے آرام سے گھر میں بھاگ نہیں رہی۔۔ میں آرام آرام سے کرنے لگا اب وہ مزے
لے رہی تھی اور آوازیں نکال رہی تھی .......... .... ہما کے دودھ کیا سال ہل رہے تھے میں دکھ کی اور تیز ہو گیا اور اسے جھٹکے مارنے لگا اب اسے بھی مزا آنے لگا تھا اور بولنا شروع ہوئی تھی بھائی اور تیز کرو اور تیز کرو میں اور تیز ہو گیا ۔۔ اور تقریبا 6 منٹ کے بھر پور جھکے مارنے کے بعد میں پھوٹنے والا ہو گیا میں نے کہا ہما میرا کام ہونے والا ہے وہ بولی میں بھی چھوٹنے والی ہوں اور ہم دونوں بہت بہت تیز ہو گئے اور ایک دم اتنے چھوٹ گئے اور میری ساری سینما کے اندر ہی نکلی و رکافی دیر اسی طرح لیٹے رہے اور پھر اس کی پھدی میں سے منی با برانے گئی اور اس نے مجھے اشارہ کیا کے اسے صاف کروں میں کپڑا ڈھونڈنے لگا۔ تو بولی چاٹ کر صاف کرو کہا تو میں رک گیا پھر میں اس کی پھدی چاٹنے لگا اور اور وہ پھر آہ بھر نے کی اور زور زور سے کہنے گئی آج تو نے علی سے زیادہ اور بہت زبردست مزا دیا ہے۔ آج تیرے لن نے مجھے بہت سکون دیا ہے۔ میں ابھی پچھدی پاٹ رہا تھا اور ساتھ ساتھ اس کی Ass میں انگلی دے رہا تھا کے میں نے دیکھا کے کھڑکی
سے کوئی دیکھ رہا تھا۔ میرے دیکھنے پر غائب ہو گیا۔ وہ کون تھا؟؟؟؟؟؟ مشال ، ای یا اپو.... ؟؟ ان میں سے کوئی تھا جو میں Next کہانی میں سناوگا۔ امید ہے میری یہ کہانی آپ کو پسند آئی ہوگی ۔ میرے ساتھ رابطہ کرنے کے لیے ای میل ہے۔

User avatar
rangila
Super member
Posts: 5586
Joined: 17 Aug 2015 16:50

Re: urdu font sexy stories 13

Post by rangila »

سردی کی رات اور گرم گرم جوانی دوستو میں کافی وے سے نیٹ پارددیسی سٹوریز پڑھ رہاہوں اور میں جب بھی کوئی سٹوری پڑھتا ہوں تو میں سوچتا ہوں کہ مجھے بھی اپنے ساتھ پیش آنے والے واقعہ آپ سب دوستوں سے شئیر کرنا چاہیے۔ تو آج میں پہلی بار اپنی سٹوری لکھ رہا ہوں اور اس کو پڑھنے کے بعد مجھے اپنی آراء سے ضرور آگاہ کیجے گا۔ میرا نام طاہر ہے۔ اور میں لاہور کا رہنے والا ہوں۔ میری عمر 25سال ہے اور میں باڈی بلڈنگ ایکسرسائز کا شوقین ہوں، اس وجہ سے اپنے جسم کی حفاظت کرتا ہوں۔ یہ واقعہ میرے ساتھ تین سال پہلے پیش آیا تھا۔ ہوا یوں کہ میں ایک بار اپنے ایک دوست جس کا نام رفت ہے، اس سے ملنے اس کے گاؤں گیا، دسمبر کا ملیا تھا اور شدید سردی تھی۔ اور جب میں اپنے دوست کے گھر پہنچاتو رات ہوچکی تھی۔ اور میرا دوست مجھ سے لے کر بہت خوش ہوا کھانا وغیرہ کھانے کے بعد میں سوگیا۔ اور کوئی آدھی رات کے وقت اس کی ایک بیٹی میرے کمرے میں آگئی، اور اس نے آتے ہی میرے 8ان لے اور بے حد موٹے لن کو ہاتھ میں
لے کر پانا شروع کر دیا۔ جب مجھے محسوس ہوا تو میں بھی کبرا کے اٹھ کر بیٹ گیا اور اس کی خوبصورت اور غضب کی جوانی کو دیکھ کر پاگل ہو گیا۔ اور سردی کا احساس ختم ہو گیا۔ اور میں نے بھی اس 36 سائز کے مے کو منہ میں لیکر چوسنا شروع کردیا۔ اور اس دوران میران جو کہ بے حدخت اکڑا ہوا قا، سلاسل اکڑنے کی وجہ سے اس میں درد ہونا شروع ہو گیا۔ اور میں نے سوچا کہ اب ان کو پھدی سے مزید دور رکھنا اچھانہیں ہے۔ اور میں نے ان کو اس کی پھدی کے اوپر گرتا شروع کردیا۔ جو کہ پہلی گیلی تھی۔ اس طرح سے اس کو بھی بے حد مزہ آنے لگا۔ اور وہ مزے سے پاگل ہونے گی۔ اور میں پانچ منٹ تک ان کوایسی
پھدی کے اوپر رگڑتا رہا اور وہ ایک دم بولی کہ اب مجھے مارکری چھ کرو گے؟؟ پلیز اب اس کو جلدی سے اندر ڈالو نہیں تو میں مر جاؤں گی۔ اور میں نے اپنے انکی و پ کواندر کی طرف دبایا اور بڑی مشکل سے ٹوپی کا کچھ حصہ اندر گیا۔ اور اس نے کہا مجھے بہت درد ہوتا ہے۔ تو میں نے کہا کہ صرف لن اندر جانے تک درد ہوگا۔ اس کے بعد مزہ ہی مزہ۔ میں نے سوچا کلین اس کے اندر جائے گا تو اس کی چیخ نکل گئی ۔ اور یہ سن کر کہیں اس کے گھر والے نہ آ جائیں تو میں نے اس کی چادر کو اس کے منہ میں دے دیا۔ اورلنک ٹو یا اس کی پھدی کے سوراخ پرنٹ کیا اور غوڑاسا تھوک لگا کر اس کو زور لگا کر اندر کی طرف دھکیلا تو اس کی آنکھوں سے آنسو نکل آئے۔ اور میں نے پھن کوٹھوڑاسے پیچھے کر کے ایک بے حد زور دار دھکا لگایا اور میرا آدھا لن اس کی پھدی کے اندر چلا گیا۔ اور وہ درد کی شدت سے بے حد ملے گی۔ اور میں نے لن کو پھر پیچھے کر کے پہلے سے زیادہ زور سے دھکالگایا۔ اورساران اس کی پھدی کے اندر چلا گیا۔ اور اس کی حالت نیم بے ہوشی والی ہوگئی۔ اور اس کا جسم کانپنے لگا۔ اور اس نے پاور منہ سے نکال بے حد بھرائی ہوئی آواز میں مجھ سے کہا کہ طاہر پلیز لن کو باہر نکالو۔ مجھے نہیں مره لیتا۔ اگران مریداند رات میں مر جاؤں گی۔ میں نے اس کتلی دی۔ اور اس کے ہونٹوں پیار کیا۔ اور پانچ منٹ کے بعد اس کی حالت بھی لیک ہوئی ۔ اور میں
نے آہستہ آہستان کو اندر باہر کرنا شروع کیا۔ اور کچھ دیر کے بعد اس کوبھی مزہ آنے لگا۔ اور وہ بھی میرا ساتھ دینے لگی۔ اور میں اسی طرح پندرہ منٹ تک اس کی گرم گرم جوانی کا مزہ لیتا رہا۔ اس نے بتایا کہ وہ تین بار فارغ ہو چکی ہے اور پلیز اب کچھ دیر رک جاؤ مگر میں کہاں رکنے والا تھا۔ اور میں دھکوں کی پیڈ مزید تیز کر دی۔ اور اس پر اس نے کہا کہ پلیز رک جاؤ۔ میں تمھارے ان کی شدت کو برداشت نہیں کر پارتی، پلیز اب بس کرو مگر میں لگاتار اپنے کام میں لگارہا۔ اور یزیدوں منٹ کے بعد مجھے یوں ہوا کہ میں فارغ ہونے والا ہوں۔ اور اس نے رونا شروع کردیا۔ اور میں نے اپنے ہونٹ اس کے ہونٹوں پر پوست کر کے پیڈ تیز کردن اس کی چودی کے اندر ہی رکھا، اور میرے لن کی گرم گرم نوار نے اس کی جلتی ہوئی چھری کو شیڈا کیا۔ ، اور اس کو سکون ملا۔ اور پانی پھدی سے باہر نکلنا شروع ہوا۔ اور میں اس کے اوپری لیٹار ہے۔ اور دس منٹ کے بعد اس نے اٹھ کر دیکھا تو بستر کی چادر پھدی کے خون اور پانی سے سرخ اور بے حد گیلی ہو چکی تھی۔ اور اس نے غسل خانے میں جا کر چادرکوی دھویا۔ اور اپنی پھدی پرشڈ اپانی ڈالا۔ اور پھدی کو دھو کر میرے پاس آ کر بیٹ گئی اور کہا کریم نے آج بھی زندگی کا احساس دلایا تم اپالن ہمیشہ کے لیے مجھے دے دو۔ اور میں نے مسکرا کر پھر سے اس کو اپنے گلے لگالیا۔ اور ایک بار پھر اسے ای طرح چودا۔ اورگی مین اٹھ کر نہا کر میں واپس اپنے گھر آ گیا۔ تو دوستوں می ں میری پہلی داستاں۔ اگر کوئی بھی آنی، یا کوئی بھی لڑکی مجھے سے سیکس کروانا چاہے تو مجھے اس ایڈریس پمیل کرے
۔ اور اس بات کا وعدہ ہے کہ اس کی ہر بات کو راز میں رکوں گا۔ اس لیے کہ میں خود ایک شرمیلا سے انسان ہوں ۔ میر ای میل ایڈریس یہ ہے

Post Reply